65

’کرونا وائرس کی ویکسین تیار کرنے میں 18 ماہ لگیں گے‘ ڈبلیو ایچ او نے اعلان کردیا

جنیوا (نمائندہ خصوصی) ڈبلیو ایچ کے سربراہ ڈاکٹر ٹیڈ روز کا کہنا ہے کہ اگلے 18 ماہ کے اندر کرونا وائرس کی ویکسین تیار کرلی جائے گی، فی الحال دستیاب وسائل کے ذریعے اس کا علاج ممکن بنایا جارہا ہے۔

کرونا وائرس کے حوالے سے بریفنگ دیتے ہوئے ڈاکٹر ٹیڈ روز نے بتایا کہ کرونا وائرس کی روک تھام کیلئے روڈ میپ بنانا ضروری ہے، ہمارے پاس ایسی بہت سی سہولیات موجود ہیں جن کے ذریعے انفیکشن کو کنٹرول کیا جاسکتا ہے، ہم نے دنیا بھر کے ممالک کو یہ ادویات بھیجی ہیں تاکہ وہ اس بیماری کا سد باب کرسکیں۔

انہوں نے بتایا کہ کرونا وائرس کے پھیلاﺅ کو روکنے کیلئے فوری طور پر 675 ملین ڈالرز کی ضرورت ہے، بعض ممالک نے اپنا حصہ ڈال دیا ہے جس کی ہم تحسین کرتے ہیں اور جو ممالک حصہ ملانے سے رہ گئے ہیں انہیں کہتے ہیں کہ وہ بھی اپنی ذمہ داری پوری کریں۔’یہ کرونا وائرس کا پھیلاﺅ روکنے کا بہترین وقت ہے، اگر ہم ابھی سے بہتر سرمایہ کاری کریں گے تو امکان ہے کہ ہم کرونا وائرس کا پھیلاﺅ روکنے میں کامیاب ہوجائیں گے، اگر ہم ایسا نہیں کرتے تو ہمیں اس کی اتنی بڑی قیمت چکانا پڑے گی جس کا تصور بھی نہیں کیا جاسکتا۔‘

ڈاکٹر ٹیڈ روز نے بتایا کہ ڈبلیو ایچ او کے زیر اہتمام دنیا بھر کے 400 سائنسدانوں کا اجلاس ہونے جارہا ہے جس میں کرونا وائرس کے حوالے سے تجاویز پیش کی جائیں گی۔ امید ہے کہ اگلے 18 ماہ کے اندر کرونا وائرس کے روک تھام کیلئے ویکسین مارکیٹ میں دستیاب ہوگی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں