129

جاوید آفریدی سے اختلافات ؟ پشاور زلمی کے کپتان ڈیرن سیمی نے افسردہ ٹویٹ کے بعد اب آخر کار خاموشی توڑ دی

لاہور (نمائندہ خصوصی)پشاور زلمی کے کپتان ڈیرن سیمی نے تین روز قبل ٹویٹر پر ایک پیغام جاری کیا تھا جس میں انہوں نے کہا کہ ” مجھے سمجھ آ گئی ہے آپ اپنا کام مکمل کرنے تک ہی اہم ہوتے ہیں “ ، اس ٹویٹ کے بعد میڈیا اور سوشل میڈیا میں کئی طرح کی افواہیں چلنا شرو ع ہو گئیں کہ ڈیرن اور جاوید آفریدی کے درمیان مبینہ طور پر اختلافات ہو گئے ہیں تاہم ایسا کچھ بھی نہیں اور اب ڈیرن سیمی نے بھی اس کی نفی کرتے ہوئے پیغام جاری کر دیا ہے ۔

تفصیلات کے مطابق ڈیرن سیمی نے ٹویٹر پر پیغام جاری کرتے ہوئے لکھا کہ ”میں یقین نہیں کر سکتا کہ میڈیا ایسا سوچ بھی سکتا ہے کہ میرے اور بھائی جاوید آفریدی کے درمیان کوئی اختلاف ہو سکتا ہے ، دراصل مجھے اس پر ہنسی آ رہی ہے ، سنو دوستو میں اس شخص سے اپنے بھائی کی طرح پیار کرتاہوں ، آپ لوگ سنجیدہ ہیں ، پشاور زلمی میرے بچے کی طرح ہے اور ہمارے درمیان کوئی چیز نہیں آ سکتی ، بالکل بھی نہیں ۔“

یہاں یہ امر بھی قابل ذ کر ہے کہ جب شعیب اختر سے نجی ٹی وی کے پروگرام میں اس معاملے پر سوال کیا گیا تو انہوں نے جواب دیتے ہوئے کہا تھا کہ ” میں زیادہ گہرائی میں تو نہیں جانا چاہتا لیکن آپ کیلئے اشارہ کر دیتاہوں ، شاہدآفریدی بھی اسی ٹیم میں تھے اور ان کا گِلہ بھی کچھ اسی قسم کا تھا۔“پروگرام کے میز بان نے بات کو آگے بڑھاتے ہوئے شعیب اختر کی طرف مضحکہ خیز لہجے میں اپنی بات پہنچائی اور کہا کہ ” مالک سے لڑائی ہو گئی ہے ؟“ شعیب اختر بھی ان کی بات سن کر مسکرائے اور کہنے لگے کہ ” ہا ں جی “۔میزبان نے سابق فاسٹ باولر کی بات سن کر حیرت کا اظہار کیا اور کہا ” اچھا ‘ ‘۔ تاہم پروگرام میں ڈیرن سیمی کے اس ٹویٹ کے پیچھے چھی وجہ واضح الفاظ میں نہیں بتائی گئی۔

یاد رہے کہ گزشتہ روز وزیراعظم عمران خان سے پشاور زلمی کے مالک جاوید آفریدی ، کپتان ڈیرن سیمی اور ہاشم آملہ نے ملاقات کی جس دوران ڈیرن سیمی کو پاکستان کی شہریت ملنے پر مبارک باد دی اور یسٹ انڈیز کی کرکٹ پر بھی بات چیت ہوئی۔

وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کے دوران ڈیرن سیمی نے خوشگوار ماحول میں پیشکش کرتے ہوئے کہا کہ میں بھی پاکستان میں ٹیکس دینے کیلئے تیار ہوں جس پر وزیراعظم عمران خان ہنس پڑے اور بولے کہ آپ کو ٹیکس سے استثنیٰ حاصل ہے۔وزیراعظم عمران خان نے ملاقات کے دوران ڈیرن سیمی کے ساتھ ویسٹ انڈیز کی کرکٹ پر بھی بات چیت کی اور پشاور زلمی کے کپتان کے پاکستان میں کرکٹ کی بحالی کیلئے کردار کو سراہا۔ انہوں نے کہا کہ پشاور زلمی کا بھی کرکٹ بحالی میں اہم کردار ہے ، پی ایس ایل نے پاکستان میں کرکٹ کی رونقیں بحال کر دی ہیں ، سیمی پہلے کرکٹر ہیں جو پاکستان میں کھیلنے کیلئے رضامندہوئے۔ عمران خان نے پاکستان سپرلیگ کو کاکامیاب ایونٹ قرار دیا اور کہا کہ پہلے پی ایس ایل ایسا نہیں تھا جو کہ اب ہو گیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں